چڑیا بولی چوں چوں چوں: اظہر نیاز

چڑیا بولی چوں چوں چوں کوا بولا کاں کاں کاں سورج بولا صبح ہوئی مینڈک بولا چپ ہو جا پھولوں سے خوشبو بولی دیکھو شبنم روٹھ چلی جلدی سے اسکول چلو با با بولے ببلو کو دیر نہیں کچھ جلدی یار ببلو بولا میں تیار

لوڈ شیڈنگ کے فوائد میرا کالم۔ اظہر نیاز

1970 ء کی بات ہے۔ میرے گاؤں میں بجلی آ چکی تھی۔ میٹرک رحیم یار خان سے کرنے کے بعد میں نے کراچی سندھ مدرسہ کالج میں داخلہ لیا۔ ہوسٹل میں رہتا تھا۔ عید شبرات پر گھر آتا۔ ایک دفعہ عید کی چھٹیوں کے بعد کراچی جا رہا تھا۔ میرا ہم سفر بھارت سے پاکستان مزید پڑھیں

اُداسی لوٹ آتی ہے اظہر نیاز

اُداسی لوٹ آتی ہے نہیں معلوم کیونکر خواب بن کر چاندنی آنگن میں آتی ہے تمھاری یاد بن کر بارشوں میں مسکراتی ہے نہیں معلوم کیونکر آسماں قدموں میں جھک کر گنگناتا ہے سمندر خامشی کو توڑ کر ساحل پہ آتا ہے نہیں معلوم کیونکر دن ڈھلے تو یہ گلابی شام آتی ہے پہن کر مزید پڑھیں

مرتے ہیں تو کیسا لگتا ہے؟ تحریر :اظہر نیاز

مرتے ہیں تو کیسا لگتا ہے؟ تحریر :اظہر نیاز یہ بہت دنوں کی بات نہیں ہے ، میں اپنے فلیٹ کی بالکونی میں بیٹھا آسمان دیکھ رہا تھا۔ اور میرے ساتھ ثروت حسین ، صابر وسیم، اجمل کمال اور رفیق نقش تھے۔ تب ہمیں نہیں معلوم کیا ہوا ہر شخص رئیس فروغؔ کے شعر سنارہا مزید پڑھیں

مولا ہم دھوپ کے لائق ہیں اظہر نیاز

میرا کالم۔ کئی دنوں سے ایک کالم لکھنے کا سوچ رہا تھا اور اس کی وجہ تھی کہ میں ملک کی مجموعی صورتِ حال سے دل برداشتہ تھا۔ یہ کیا ہو رہا ہے۔ عورتوں کے ساتھ ظلم ہو رہا ہے۔ اجتمائی آبرو ریزی کے واقعات بڑھتے جا رہے ہیں۔ کم اسن بچیوں کی آبرو ریزی مزید پڑھیں

یہ دکھ تو آنے جانے کے لیے ہیں

یہ دکھ تو آنے جانے کے لیے ہیں تمہیں اپنا بنانے کے لیے ہیں نہیں باتیں،ہیں میرے پاس آنکھیں انہیں سب کچھ سنانے کے لیے ہیں یہ خوشبو پھول بادل تتلیاں توُ فقط ہم کو ستانے کے لیے ہیں تمہاری یا د میر ی زندگی ہے یہ سانسیں تو بہانے کے لیے ہیں دلو ں مزید پڑھیں